/مدیرہ کی ڈاک

مدیرہ کی ڈاک

ضروری وضاحت: محدود صفات کے باعث مدیرہ کی ڈاک میں تبصرے چیدہ چیدہ شائع کئے جاتے ہیں۔ بہت سارے تبصرے میل اور واٹس اہپ کے ذریعہ موصول ہوتے ہیں۔ ادارہ سب کو شائع کرنے سے قاصر ہے۔ ان تمام خواتین و حضرات کا ہم تہہ دل سے مشکور ہیں جو ہماری حوصلہ افزائی اور پسند کرتے ہیں۔

اگست ۲۰۲۰

میں نے دیکھا ہے …آپکے مضامین، کہانیاں واقعات سب ہی مواد دلچسپ ہوتا ہے …اب کم ہی رسالوں میں اس ورائٹی میں اچھی تحریریں ملتی ہیں ۔مبارک ہو مدثرہ جی کہ ابھی آپ کی شروعات ہی ہے اور یہ ایک اچھا معیاری جریدہ ہے ۔ آپکو اللہ اور ترقی دے آمین۔

صاحبزادی فائزہ احمد ربوہ

السلام علیکم ورحمة اللہ وبرکاتہ

جزاک اللہ احسن اللہ الجزاء اس دفعہ آپ نمبر لے گئی ہیں۔آبگینے برق رفتاری سےآملا ۔باری آپاکاقرب اور ساتھ تو عطیہ خداوندی تھا …اوران کےلکھنے کی صلاحیت لگتا ہے کوئی خاندانی  ورثہ بھی ہے ۔جو آپ کے ابو۔ بھائی۔اور آپ میں بھی کافی ہے ماشاءاللہ۔بہت اچھا پیارا میگزین ہےاور بہت اچھی مضبوط ٹیم ہے۔اللہ مبارک کرے۔اللہ کرےزور قلم اور زیادہ۔

برکت ناصر کراچی

السلام علیکم و رحمةاللہ و برکاتہ      کیا حال ہے پیاری مدثرہ جی!

آبگینے کا تحفہ بہت خوبصورت ہے۔ اس کے بارے پرسوں سے میں سوچ رہی تھی کہ آجکل میں آنے والا ہے۔ یہ رسالہ بہت دلچسپ اور بہترین علمی معیار کا حامل ہے اور ماشاء اللہ ترقیات کے سفر پہ گامزن ہے۔ہاتھ میں آئے تو جب تک پورا پڑھ نہ لیا جائے اٹھنا محال ہوتا ہے۔ یہ دیدہ زیب ڈائجسٹ جہاں ادبی ذوق و شوق رکھنے والوں کی تشنگی دور کرتا ہے وہیں روحانی ترقی کے لئے درس قرآن کریم اور اسوہ امہات المومنین (رضی اللہ عنھن) اور بےشمار عمدہ اور معیاری مضامین لئے ہوئے ہے۔ منظوم کلام بھی ایک سے بڑھ کر ایک دلچسپ اور کمال! ماشاء اللہ ۔آپ کی تمام ٹیم ڈھیروں مبارک باد کی مستحق ہے۔ اللہ کرے یہ ڈائجسٹ دن دگنی رات چوگنی ترقی کرے۔ آمین ثم آمین۔ جزاک اللہ

منزہ سلیم جرمنی

محترمہ ایڈیٹر صاحبہ اور پیاری حمیرہ جی!

جولائی کا آبگینے اپنی پوری آب و تاب کے ساتھ بہت سی مختلف تحریرات اور نظموں غزلوں کے ہمراہ موصول ہوا۔ بہت دلچسپ پایا۔اسلامی تعلیمات کے تاریخی مضامین اور دیگر افسانچے مختلف رُوپ لئے رسالہ کی خوبصورتی اور افادیت کو بڑھاتے ہوئے پائے۔ سبھی لکھنے والے ماشاء اللہ اپنا اپنا مقام رکھتے ہیں۔ اللہ سب کے قلم میں برکت ڈالے۔ آمین

صفیہ چیمہ جرمنی

السلام علیکم ورحمة اللہ

پیاری حمیرا جی۔’’آبگینے “ کے لئے تہہ دل سے آپکی مشکور ہوں ۔’’آبگینے “واقعی اپنی مثال آپ ہے ۔یہ ایک معیاری اور خوبصورت ڈائجسٹ ہے ۔اس کی دلکشی اس کی نثر اور نظم میں پڑھنے والے کو اپنے سحر میں جکڑ ے رکھتی ہے ۔ ادبی ذوق کی تسکین کے لئے ڈھیروں دعائیں ۔اللہ تعالی آپ کو جزائے خیر دے ۔اور شاد و آباد رہیں۔

فرحت ضیاء راٹھور ہمبر گ

پیاری مدثرہ جی         السلام علیکم ورحمة اللہ و برکاتہ

جولائی کا آبگینے ملا۔حسب معمول درس قرآن پاک سے خوبصورت آغاز کیا گیا۔ اداریہ میں درست تحریر کے لیے بہت عمدہ معلومات پڑھنے کو ملیں۔جو یقیناً ایک لکھاری کے لیے ممد و معاون ثابت ہوں گی۔اسلامی تعلیمات کے سلسلے میں ام المومنین حضرت زینب بنت خزیمہ کی حیات مبارکہ ، آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کی ازواج مطہرات کی ایمان افروز روایات پڑھ کر آنکھیں نم ہو گئیں۔جیسے سارے منظر آنکھوں کے سامنے آ گئے ہوں۔ایسے مضامین آبگینے کی زینت ہیں۔نہ پھول پتے نہ ہم مسکرائے بارش میں ،ہماری پرانی یادیں ،یہ دستور زباں بندی ، لال ڈوپٹہ اور دھاگے دوبارہ پڑھ کر بہت اچھا لگا۔ماسی زرقا میں معاشرے میں موجود عام رویوں کو اجاگر کیا گیا ہے۔مرد و خواتین کے مشتبہ نام پڑھ کر مسکرائے بغیر نہیں رہ سکی۔کیونکہ کچھ ناموں کو میں بھی خواتین ہی سمجھتی تھی۔اس کے زریعے اچھی معلومات ملی ہیں۔سوشل میڈیا کے بزنس نے بھی متاثر کیا ۔بانو قدسیہ کی زندگی واقعی باکمال تھی۔ اور باکمال طوطا کی دوسری قسط بھی عمدہ تھی۔باکمال طوطا کی چند مزید قسطیں لکھ کر آگے بڑھایا جا سکتا تھا۔ “دل کو صحت مند بنانے والی غذائیں” میں بہترین مشورے شامل ہیں۔دیگر تمام بہنوں کی کاوشیں بھی قابل تحسین ہیں۔ شاعرات نے بھی اپنے کلام کے زریعے قارئین کے دل موہ لیے۔ہر ایک کے لیے لکھنا شروع کیا جائے تو مدیرہ کی ڈاک کے صفحات زیادہ ہو جائیں گے۔اس لیے اسی پر اکتفا کرتی ہوں ۔ تمام بہنوں کی شکر گزار ہوں جن کی تحریریں اور کلام آبگینے کی زینت بنیں۔اور خصوصاً آبگینے کی ٹیم جن کی محنت سے ہمیں ہر موضوع پر عمدہ معلومات حاصل ہوتی ہیں۔اللہ کرے یہ رسالہ ترقی کی منازل تیزی سے طے کرتا چلا جائے۔آمین سب کے لیے پرخلوص دعائیں

امتہ الرشید آزاد کشمیر

ماہ جولائی کا آبگینے بھی ہمیشہ کی طرح اپنے دامن میں بہت سے رنگ سمیٹے ،قاریئن کے لئے خوشیوں کا پیامبر بن کر آیا.اتنے سارے خوبصورت رنگ جنھیں سمیٹنے کے لئے قاریئن پورا مہینہ بے تابی سے انتظار کرتے ہیں۔اداریہ ہمیشہ کی طرح با مقصد اور منفرد موضوع لئے ہوئے سامنے آیا.(درست تحریر کے لیے اہم باتین)جس کی نئے لکھاریوں کو اشد ضروت ہے،طاہرہ زرتشت صاحبہ کی تحریر(پر ان)بہت ہی باکمال تحریر ہے ۔عائشہ سعدیہ صاحبہ کی تحریر ( جنت کی سوداگر -مایئں ) نے آبدیدہ کر دیا..دعا علی صاحبہ کی تحریر ( آخری خواہش) نے بھی دل پر گہرا اثر چھوڑا..قراة العین فاروق کی تحریر (ماسی زرقا) سبق آموز کہانی ،اس کے علاوہ سلمی’ قریشی صاحبہ ، قدسیہ عالم صاحبہ اور رفعت اسلم صاحبہ کی معاشرتی مسائل پر مبنی تحاریر نے بھی بہت زیادہ متاثر کیا۔بشری’ عمر بامی صاحبہ کی دل کو گداز کرنے والی تحریر ،علاوہ ازیں نعمانہ حبیب،،فاطمہ علی اور خوش بخت صدیقی صاحبہ کی تحاریر بھی بہت پر اثر اور مفید تھیں۔ …نئے شعراء کا تعارفی سلسلے میں (فوزیہ اختر ردا ) کا تعارف اور ان کے کلام سے متعلق پڑھنے کو ملا،،یہ بہت زبردست سلسلہ ہے،،جس میں نئے شعراء کے فن کو بھی سراہا جاتا ہے …اس کے ساتھ ساتھ صاحبزادی امتہ القدوس صاحبہ،،امتہ الباری ناصر صاحبہ، طاہرہ زرتشت صاحبہ سعدیہ تسنیم سحر اور فہمیدہ مسرت صاحبہ کی خوبصورت نظموں نے دل کو تراوت بخشی… پورے مہینے کے انتظار کی قیمت وصول ہو گئ..اتنا بھرپور رسالہ کہ جس کی کوئ مثال نہیں..

دعا گو…آصفہ بلال پاکستان

مدیرہ آبگینے مدثرہ عباسی جی

                        آبگینے…

مبارک تمہیں خوشی کا یہ سماں

مبارک مبارک رہو شادماں

آبگینے کی ساری ٹیم ،قارئین اور سب لکھنے والوں کو سالگرہ کی دلی مبارکبادجیسا کہ آبگینے… کامطلب آئینہ ، شیشہ ، عاشق کا دل ، بوتل ، شراب اور شیشے کا گلا س ہے ۔

جب میں آبگینے کے ان سب معانی پر غور کرنے لگی ۔تو مجھے ساری صفات ہمارے پیارے سے اس رسالہ میں نظر آئیں ۔

شیشے کی طرح صاف ستھرا عام دنیاوی ڈائجسٹ سے بالکل منفرد ،اعلی و عمدہ تحریرات سے مرصع پاک وصاف دلوں کی آواز “آبگینے “ہے ۔اس کے اندر لکھنے اورپڑھنےوالوں کے لئے شفاف آئینہ کی طرح سُچی کھری باتوں کی چمک اور روشنی لئے ھوئے دینی سلسلے ہیں جو قاری کی روح تک کو منور کر دیتے ہیں ۔۔آبگینے کا مطالعہ دیار غیر میں اردوادب کی تشنگی ختم کرنے کا باعث ہوا ہے ۔یقین مانئے عشق سا ہو گیا ہے قلم کی وارفتگی اس کے لئے دھیرے دھیرے بڑھتی جارہی ہے۔۔ جوں ہی ایک ماہ کے بعد موصول ہوتا ہے جلد جلد سب کچھ ایک نشست میں پڑھنے کو دل کرتاہے ۔۔ادب کا گہوارہ یہ میگزین تعلیم و تربیت کے ساتھ ساتھ اردو کی ترویج میں نمایاں خدمت کر رہا ہے ۔پردیس میں اپنی زبان میں آن لائن رسالہ دل کی فرحت و سکون کا موجب بنتا ہے ۔۔اس میں تما م مضامین بہت دلچسپی لئے ہوتے ہیں خاص طورپرایک ہی رسالہ میں دینی ودنیاوی علوم “من وسلوا “روح کی غذامہیا کرتاہے ۔دونوں علوم اعلی معیار لئے خواتین کا یہ ڈائجسٹ ۔۔دوسری لفظوں میں نئے لکھنے والوں کی حوصلہ افزائ بھی کرتا ہے ۔نظم اور نثر دونوں کا معیار بہت عمدگی سے دن بدن روز افزوں ترقی پزیر ہے ۔منظوم کلام کے ساتھ ساتھ ہلکے پھلکے انداز میں کہانی ، افسانہ اور آپ بیتی سب شستہ زبان میں لکھی تحریرات پر مبنی دلچسپی لئے خواتین کا اک اپنا ڈائجسٹ ہے اپنے منفردانداز میں ۔۔۔آبگینے کی روح رواں ٹیم اور لکھاری شاعرات اور نثر نگاروں کو اس کی سالگرہ پر “پیغام تہنیت “خدا کرے دن دگنی رات چوگنی ترقی کرتا چلا جائے اور اس کے سب لکھنے والوں کے لئے۔’’اللہ کرے زور قلم اور زیادہ‘‘آمین خیر اندیش

بشری عمربامی

جولائی ۲۰۲۰

ماشاءاللہ ،جون،کاآبگینے اپنی پوری آب و تاب کے ساتھ اپنی روایات برقرار رکھے ہوئے آن ملا۔جزاک اللہ۔درس قرآن وحدیث میں بہت عمدہ موضوع،شادیاں کرلو،لیکن عدل و انصاف؟؟پوچھےجاوگے۔اداریہ واہ مدثرہ جی ،آبگینے،کی تشریح تاریخ کی روشنی میں لطف آگیا۔جب حوالہ پیارے آقا صلی اللّہ وسلم۔پندرہ صفحات اسلامی تعلیمات پر مبنی واقعات ایک سے بڑھ کر ایک ماشاءاللہ۔گو کے پہلے بھی پڑھا ہوا ہو۔لیکن یہ وہ ذکر ہیں کہ بار بار پڑھنا بھی دل کو بہت بھلا لگتا ہے۔پھر ہرایک کا اپنا انداز بیاں ،عورت مغربی اقدار میں اعلی اقدار کی ضامن ہے،،،بہت عمدہ واعلی اور اس پر اشعار کاتڑکا چار چاند لگا دئیے۔شوربھی ہے سناٹا بھی اور رابعہ شیخ کے مضامین زندگی کی کٹھناہیوں سے نکالنے کے لیے کوشش،یادوں کی بہتی ندیا کےساتھ،بامی اداس کھڑی آگےآچھی آپا کی،بیوہ،ہررشتےکابھرم ، شکریہ کرونہ،سعدیہ بہت عمدہ وہ کون تھی۔؟بہت خوب۔ صدائے دل، مبشرہ ناز کاتو انداز ہی مختصر اور جامع زبردست۔شاعری کی طرف آہیں تو ماشاءاللہ بہت عمدہ واعلی کلام پڑھنے کو ملتاہے۔فوزیہ بٹ،بشارت سکھی کی نعتیں،،طاہرہ زرتشت صاحبہ،کس طرح عید کادن مناتے ہیں،امتہ الباری ناصر صاحبہ عزت نفس،،بشری وحید،شوکت سلطانہ،فہمیدہ مسرت،بشری سحر،سلمی قریشی جی کے تو کیا کہنے،،،اپنی حمیرا کا یہ شعر تو دل میں دھونی رما کے بیٹھ گیا ہے،وہ ہر بار محبت  سے  ہی پیش آتا ہے،میں نا شکری ہوں جو اس کو بھول گئی تھی۔ادبی خدمات میں دو نامور شخصیات،،،قرتہ العین حیدر،بانو قدسیہ،قسط دوم کے منتظر۔ پرنسپل طاہرہ قاضی کی مثال ہمیشہ یاد رکھنے کے قابل ہے۔ انڈیا سے آنے والے دونوں مضامین،ہر بوند کو ملتا نہیں محافظ سیپ سا ، خواتین کا علمی امپاورمنٹ، بہت عمدہ ہیں ۔اورنگ آباد میں ماشاءاللہ لگتا ہے ذہین روشن ذہن آباد ہیں۔ مزاح نگاری میں مرزا غالب کے لطیفے،،مرزاچپاتی کے خاکے۔پھلوں کے استعمال کے متعلق معلومات۔میرے والد اور ذیابیطس بہت عمدہ مضمون۔چین سے چائے کی چوری ،،دوسری قسط،، کا انتظار ہے‌۔۔بچوں کا گلستان،، میری پیاری اماں جی، ایک مثالی کردار ،ایسی باکردار ماہیں آج بھی اس قوم کو رب عطا فرمائے آمین۔باکمال طوطا دیکھیں سفیر بھائی کے کام آتا ہے یا نہیں؟عیشتہ جی بچوں کاگلستان،بہت پیارا ہے بڑے بھی اس سے لطف اندوز ہوتے ہیں ماشاءاللہ ۔ آبگینے،ٹیم ورک کا ایک خوبصورت شاہکار میگزین ہے اللہ کرے دن دگنی رات چوگنی ترقی کرے آمین یارب العالمین آمین

برکت ناصر ۔ کراچی پاکستان

السلام علیکم

حمیرا جی بہت ہی شکریہ آبگینے کا۔ واہ پہلی نظر کا جائزہ حسب معمول لئے بغیر نہیں رہ سکتی۔ یہ ایسا ڈائجسٹ نہیں جس کو ایک ہی نشست میں آن لائن پڑھ لیا جائے۔پرنٹ کر کے تسلی سے لطف اندوز ہونگی انشاء اللہ۔

سابقہ دونوں میگزین بھی پرنٹ کر کے رکھے ہیں۔اب دوبارہ لطف لوں گی مطالعہ کا۔

آپکی نوازش کی مشکور ہوں۔مضمون کی اشاعت کے لئے۔ اللہ آپکو اس حوصلہ افزائی کی بہترین جزاء عطا فرمائے۔آمین

خوش رہیئے اور دعاؤں میں یاد رکھیئے۔

صفیہ چیمہ فرینکفرٹ جرمنی

 بہت بہت شکریہ  آپکی جانب سے آبگینے موصول ہو ا ۔بہت معیاری  میگزین ہے.اللہ تعالی مزید کامیابیاں عطا فرمائے آمین۔

مومنہ ہالینڈ

مکرمہ و محترمہ مدیرہ صاحبہ

                                                السلامُ علیکم ورحمة اللہ و برکاتہ

سب سے پہلے تو میں آپ کو اور آپ کی پوری ٹیم کو مبارکباد پیش کرنا چاہوں گی کہ آپ سب نے جس جانفشانی سے اس رسالے کو بام عروج تک پہنچایا ہے وہ واقعی قابلِ تحسین ہے. ہر بار آبگینے کسی نایاب ہیرے کی مانند اور زیادہ چمکتا دکھائی دیتا ہے. اداریہ کی تحریر محترمہ مدثرہ عباسی صاحبہ کی شاہکار تحریر ہے جس میں رسالہ کے نام (آبگینے) کا مفہوم اور مقصد اس فصاحت اور خوبی سے بیان کیا گیا ہے کہ آفرین ہے.. محترمہ صفیہ چیمہ صاحبہ کی تحریر (عورت مغربی معاشرے میں اعلیٰ اقدار کی ضامن ہے) بجا طور پر داد کی مستحق ہے.. محترمہ بامی جی کی تحریر (یادوں کی بہتی ندیا) انسانی جذبات و احساسات کی عکاس نظر آئی ۔اچھی آپا کی تحریر (بیوہ) نے آبدیدہ کر دیا، نہایت حساس موضوع قلم اٹھایا اور بیوہ عورت کی تلخ زندگی پر روشنی ڈالی. سعدیہ تسنیم سحر کی تحریر (شکریہ کرونا) نے جھنجھوڑ کر رکھ دیا.. مبشرہ ناز کی تحریر نے ہمیشہ کی طرح چار چاند لگا دیئے. مرزا چپاتی اور مرزا غالب کے لطائف نے گوشہ ادب کی زینت میں اضافہ کیا اور ساتھ ہی ساتھ مکرمہ سلمیٰ قریشی، مکرمہ طاہرہ زرتشت اور مکرمہ امتہ الباری ناصر صاحبہ کے کلام نے روح میں تازگی بھر دی. مجموعی طور پر اس بار کا شمارہ پہلے سے بھی شاندار رہا. اللہ تعالیٰ آبگینے کو مزید ترقیات سے نوازے آمین ثم آمین۔

آصفہ بلال پاکستان

 

جون۲۰۲۰

محترمہ مدثرہ عباسی صاحبہ!  مئی کا شمارہ ملا پڑھ کر دلی مسرت ہوئی۔ کوشش کی کہ یکدم پڑھ کر ختم کروں لیکن مصروفیت اڑے ای  چند دن بعد مکمل کیا۔اپکے میگزین  کے مضامین اور نظمیں غزلیں عمدہ اور معیاری ہیں۔ دور حاضر میں رسائل اور اخبارات مختلف نظریات و خیالات کی تبلیغ و اشاعت میں اہم کردار ادا کررہےہیں۔ لیکن آپ دیار غیر میں بیٹھکر اُردو ادب اور خواتین کی اصلاح کےلئے جو خدمات ادا کررہی ہیں وہ قابل تحسین ہے۔ آج کل لکھنے پڑھنے کا رواج کم ہوتا جارہا ہے الیکٹرونک میڈیا کی وجہ سے۔ اس لحاظ سے آپ مبارک باد کی مستحق ہیں۔ درس القران میں عورت کا کردار اور مقام اسلام کی رو سے بیان کیا جاتا ہے وہ نہایت عمدہ دلچسپ ہوتا ہے۔ اسکا مقصدو نصیب العین  قارئین تک پہنچانے کی کوشش شہادت حق اورفی سبیل اللہ کی ایک صورت ہے اللہ تعالیٰ اپکو جاری و ساری رکھنے کی توفیق عطا فرمائے۔ تمام مضامین ایک دوسرے سے بڑھ کر ہیں اسلامی تعلیمات کے شعبے سے تعلق رکھتے مضامین قابل ستائش ہیں اور نظمیں غزلیں عمدہ اور معیاری ہیں۔ غرضیکہ یہ مکمل جامع معلوماتی جریدہ ہے آپ تمام کو اسکے میعار کو قائم رکھنے اور مزید بہتر بنانے کی توفیق عطا فرمائے امین ۔

صدیقہ شاہ ہیوسٹن امریکہ

السلام وعلیکم  مدیرہ صاحبہ

میں اور میری بہنیں بڑے ذوق و شوق سے اسکا مطالعہ کرتی ہیں۔ آبگینے اردو کی سماجی اور مذہبی  نوعیت کے اعتبار سے منفرد و دلچسپ کاوش  ہے۔ اسکے تمام مضامین خوب سے خوب تر ہیں بالخصوص اداریہ لیلتہ القدر، اسلامی تعلیمات کے مضمون  اور اُم المؤمنین حضرت حفصہ ؓ نہایت اعلیٰ ہیں ۔ اسکی دوسری قسط کا انتظار ہے۔ ان کے علاوہ حرف دعا،  رب کی طرف لوٹ آؤ،  اسلامی تعلیمات کی صحیح عکاسی کرتا ہے۔طاہرہ زرتست ناز کا مضمون اور دیگر مضامین دل و دماغ پر گہرے اثرات مرتب کر گئے ۔ حمیرا نگہت کا کانچ، اے صبوحی کا ’’مرزا چپاتی اردو کے مشہور خاکے ‘‘دلی لکھنؤکی اردو گھرانوں سے تعلق کی یادیں تازہ ہو گئی۔ جو آجکل کے جدید دور میں گم ہوگی ہے۔ سلمیٰ قریشی،اچھی آپا، بشریٰ  بامی کی تحریریں معیاری اور عمدہ دلچسپ ہیں۔ اسی طرح تمام کے منظوم کلام بھی عمدہ ہیں۔ اسکے علاوہ  بچوں سے متعلق ، پکوان ، طبی معلومات، آئیں اردو سیکھیں، یورپ کے لحاظ سے بچوں کےلئے مفید ہے غرضیکہ تمام معلوماتی اور سبق آمیز تحریرات پر مشتمل معیاری مجلہ ہے ۔ اسمیں کوئی شک نہیں کہ یہ قارئین کےلئے بڑی محنت سے ترتیب دیا جاتا ہے۔ اللہ تعالیٰ آپکی اس قربانی کو احسن رنگ میں قبول فرمائے آمین ثم آمین۔

ثریا فاطمہ ہاشمی -دہلی بھارت

السلام علیکم  پیاری حمیرا جان !

خوش رہیے ! میگزین دیکھ لیا ہے پرنٹ نکلوا کر تفصیل سے پڑھنا باقی ہے  بادی النظر میں بہت ہی عمدہ اورمعیاری لگا ۔ماشاءاللہ بہترین ٹیم ورک ہے

سلمی قریشی سرگودھا پاکستان

پیاری حمیرہ جی

بہت بہت شکریہ آپ نے مجھ ناچیز کو آبگینے ارسال کیا۔دیکھ کر  جی توچاہا کہ ایک ہی نشست میں پڑھ جاؤں۔مگر عمرِ رفتہ کی مہربانیوں سے اپنی کئی عادات اب اپنے بس میں نہیں رہیں۔ لیکن آبگینے کو بھی یونہی نہیں چھوڑا۔ مختلف اقساط میں مزے لے لے کر پڑھا۔ دینی ،علمی، تاریخی ،ادبی مضامین سے مرصع یہ آبگینے بہت اچھا لگا۔سب لکھنے والوں اور حصہ ڈالنے والوں کے لئے یہی دعا ہے کہ ’’اللہ کرے زورِ قلم اور زیادہ‘‘۔ آمین

مومنہ ہالینڈ

اس ماہ کا آبگینے اپنی پوری آب و تاب کے ساتھ اپنے دامن میں علم و ہنر کے موتی لیے جب ملا تو دل خوشی سے معمور ہو گیا۔ہمیشہ کی طرح آغاز درس قرآن کریم سے کرتے ہوئے مدثرہ عباسی صاحبہ نے اداریہ میں رمضان المبارک کے فضائل اور لیلة القدر کی اہمیت سے آگاہ کیا۔ بعدازاں اسلامی تعلیمات پر مختلف موضوعات کو نہایت پراثر انداز سے بیان کیا گیا جن میں دعا علی صاحبہ کی تحریر ’’توبہ و استغفار کی ضرورت‘‘ بے حد عمدہ تھی۔ ساتھ ہی ساتھ طاہرہ زرتشت صاحبہ، امتہ الباری ناصر صاحبہ کے دلنشیں کلام پڑھنے کو ملے۔ ایک طرف حمیرا نگہت صاحبہ کی تحریر ’’کانچ‘‘ محبت کا استعارہ بن کر دل پر اتری تو دوسری طرف مبشرہ ناز صاحبہ کی تحریر ’’لنگڑا‘‘معاشرتی رویوں کی عکاسی کرتی دکھائی دی۔ اس کے علاوہ سلمیٰ قریشی صاحبہ اور بشریٰ بامی صاحبہ کی تحاریر ’’آس ‘‘اور ’’آس نراس ‘‘اپنے اپنے انداز بیاں میں منفرد رنگ بکھیرتی نظر آئیں۔اچھی آپا کی تحریر’’ چاہت کی موت‘‘ قدسیہ عالم صاحبہ کی تحریر’’ آخری خواہش ‘‘اور سعدیہ تسنیم صاحبہ کی تحریر ”رات گئے دستک‘‘نے بہت متاثر کیا۔ بیوٹی ٹپس کے علاوہ کچن کارنر میں بھی فائدہ مند معلومات ملتی ہیں۔میں آبگینے کی پوری ٹیم کو تہہ دل سے مبارک باد پیش کرتی ہوں کہ اس قدر مکمل اور بھرپور رسالہ بجا طور پر ان سب کی محنت شاقہ کا نتیجہ ہے۔ اللہ تعالیٰ آبگینے کو مزید ترقیات سے نوازے آمین ثم آمین

آصفہ بلال پاکستان

مئی ۲۰۲۰

مدیرہ عباسی صاحبہ! اردو زبان وادب میں خواتین ڈائجسٹ آبگینے مختلف اصناف میں جس تیزی سے اس نے ترقی کی وہ کسی تعارف کا محتاج نہیں۔ عاجزہ ابتدا ہی سے اسکی قاری ہے۔یہ جانکر زیادہ خوشی ہوتی ہے کہ یہ خالصتا خواتین ڈائجسٹ ہے اسکا ہر لکھاری، ادیبہ و شاعرہ اور افسانہ نگاروں نے اردو زبان وادب کا دامن اس صنف سے بھر دیا۔ تمام مضامین درس القران سے لیکر اخر تک غرضیکہ تمام نے رسالہ کو زندہ و جاوید بنایا ہے۔ جسکو پڑھکر ہر قاری کسی بھی طرح سے بوریت محسوس نہیں کرتا۔ اب تو اس سے دلی مسرت اور لگاو ہوگیاہے اور اگلے شمارہ تک انتظار بھی رہتا ہے۔ مزید یہ کہ جو مسلم خواتین عدم واقفیت یا مغربی تہذیب کے رسم و رواج کی نقالی و اثرات کے باعث بے اعتدالی کا شکار ہیں ان کےلئے یہ مفیدو معلوماتی اور اصلاحی ہے۔ اللہ تعالی سے دعا ہے کہ تمام ٹیم اور تمام لکھاری کے قلم کو دوام نصیب ہو امین

وقارالنساء(دہلی انڈیا)

پیاری مدثرہ عباسی مدیرہ اداب۔ ابگینے میگزین شمارہ اپریل موصول ہوا اسکی ہر تحریر اور ہر لفظ آئینہ کی طرح ہے گویا یہ حقیقی معنوں میں آئینہ ہے۔ غالب کا شعر ہے

آئینہ کیوں نہ دوں کہ تماشا کہیں جسے

ایسا کہاں سے لاؤں کہ تجھ سا کہیں جسے

آبگینے میگزین اردو نظم ونثر پر یکساں مقدرت رکھتا ہے۔ اور اسکا ادبی وشعری مرتبہ بہت بلند اور قابل رشک ہے۔ تمام مظامین دل آویز اں اور موہ لینے والے ہوتے ہیں جنکو پڑھ کر وقت کا احساس نہیں رہتا۔ یہ کوئی مبالغہ نہیں حقیقت ہے۔ اللہ کرے یہ ابگینہ چاند کی طرح روشن ستاروں کی طرح اکناف عالم میں پھلتاو پھولتا رہے اور ہر کوئی اس سے استفادہ حاصل کرنے والا ہو۔

 ڈاکٹر زبیدہ صدیقی کراچی پاکستان

’’آبگینے ‘‘کا تازہ شمارہ موصول ہوا۔ پیشتر ازیں ’’لاہور انٹرنیشنل‘‘ کا شمارہ بھی بذریعہ میل موصول ہوا تھا ان دونوں شماروں کی ظاہری زیبائش ومعنوی خوبصورتی گویا سونے پر سہاگہ کا درجہ رکھتی ہے۔دونوں شمارے دیکھ کر انکے مرتب نگاروں کو “تعریف”کا تحفہ نہ بھجوانا بذات خود کاہلی،لاتعلقی اوراداب کی بے حرمتی کے زمرے میں اتا ہے۔۔ خدا کرے کہ یہ جریدہ ماہنامہ سے ہفت روزہ تک کے سفر کی منزلیں بھی جلد از جلد طے کرے آمین۔ خاکسار کی طرف سے اتنی خوبصورت وجازب نظر کاوش پردل کی گہرائیوں سے مبارک باد قبول فرمائے۔ اللہ کرے زور قلم اور زیادہ!

والسلام ناصر احمد وینس کینیڈا

مکرمہ محترمہ مدثرہ عباسی صاحبہ مدیرہ اردو میگزین !!’’ ماہنامہ آبگینے‘‘

السلام علیکم و رَحمتہ اللہ و برکاتہ

سب سےپہلےآپ سب کو اور آپ کے تمام قارئین کو رمضان المبارک کی مبارک پیش کرتی ہوں۔ اللہ تعالٰی ہمیں اس مبارک مہینہ میں عبادات کی توفیق بخشے اور اپنی اصلاح کی توفیق عطا کرے۔ اپریل کا شمارہ خاکسار کے ہاتھ میں ہے۔ بلاشبہ یہ خواتین کا پسندیدہ میگزین ہے۔ اس کو ہاتھ میں لیتے ہی احساس ہوتا ہے کہ اسے سنوارنے اور سجانے والے اورترتیب دینے والوں کے دِل اپنے مولا کے حضور جھکنے والے اور اس سے پیار کرنے والے ہیں۔ اس کا انداز دنیا کے دیگر رسالوں سے یکسر مختلف ہے۔

رائیٹر کا کام یہ ہوتا ہے کہ وہ زمانے کی نبض پر ہاتھ رکھتے ہوئے اس کا درد محسوس کرے اور ایک مسیحا کی طرح اس کی تکلیف کو پہچان کر اس کا علاج تجویز کرے۔ اور معاشرے کی سوچ کو مثبت طرف لے جائے غلط رحجانات کی نفی کرتے ہوئے درست راہنمائی کرے۔

افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ آج قلم سے وہ کام نہیں لیا جارہا جس کی وقت کو اور معاشرے کو انتہائی ضرورت ہے۔ جانتی ہوں کہ یہ بڑے حوصلے اور دل گردہ کا کام ہے۔ ہم مسلمان تو کہلاتے ہیں مگر اسلام کی اور قرآن کریم کی تعلیم سےہمارا صرف نام کا تعلق باقی رہ گیا ہے اور بد قسمتی سے جن نام نہاد علماء کو عوام کی تربیت کا کام سونپ دیا گیا ہے وہ کلیتہً خود اس پاکیزہ و اَعلٰی تعلیم سے بے بہرہ ہیں۔

مجھے نہایت خوشی سے یہ اعتراف کرنا پڑتا ہے کہ آبگینے کو ہاتھ میں لیتے ہی اس بات کا احساس ہوتاہے کہ اس کی انتظامیہ نہائت محنت اور جانفشانی سے کام کر رہی ہے اور اس کی تیاری دینی و دنیاوی دونوں ضرورتوں کو پورا کرتی ہے۔ یہ میگزین قرآن و سنت کی روشنی میں معاشرے کی راہنمائی کرتا دکھائی دیتا ہے۔ آج زمانے کو ایسے ادب کی ضرورت ہے جو تصوراتی دنیا سے باہر نکل کر حقیقت کی بات کرے۔ اور ہمارا بلکہ تمام دنیا کا رشتہ اس کے خالق و مالک سےجوڑ دے کیونکہ انسان کی بھلائی اور خیر اسی میں ہے۔ پس آپ کو مبارک ہو کہ آپ کو یہ توفیق مل رہی ہے۔ اس میں علمی اور دینی مضامین بڑی محنت سے تیارکرکے موتیوں کی طرح جڑے جاتے ہیں علمی اور ادبی معیار بلند ہے۔

خاکسار کو اس کے لئے کوئی بھی خدمت کر کے دلی خوشی ہوتی ہے۔

عزیزہ حمیرا بھی اس کے لئےمحنت کے ساتھ معاون و ممد ہیں۔

آپ کو،آپ کی ساری ٹیم کو مبارکباد پیش کرتی ہوں۔ اللہ کرے کہ ہم ہمیشہ قلم کا حق ادا کرنے والے ہوں۔ یاد رکھیں جس کام میں ہمیں اللہ کی رضا مقدم ہوگی خُدا اس میں بہت برکت ڈالے گا انشاء اللہ

اپنا ایک تازہ شعر اس میگزین کی نذر کرتی ہوں۔ جو اسی کے لئے عطا ہوا ہے۔

اپنے حصے کی شمع آؤ جلاتے جائیں

خونِ رگِ جاں سے ظلمت کو مٹاتے جائیں

خاکسار طاہرہ زرتشت نَاز

پیاری حمیرا جی

اپریل کا شمارہ ملا۔لاک ڈاون کی وجہ سے پرنٹ نہ ہو سکا۔ اس لیے موبائل پر ہی مکمل پڑھا۔درس القرآن سے آؤ اردو سیکھیں تک سب قابل تعریف ہے۔حضرت عائشہؓ کے بارے میں جامع مضمون مکمل ہوا۔تمام بہنوں نے اپنے موضوعات پر نہایت عمدگی سے لکھا ھے۔پڑھتے ہوئے قاری تحریر میں کھو جاتا ھے۔سب کے بارے میں تبصرہ بہت لمبا ہو جاتا ہےاس لیے سب کی محنتوں کی شکر گزار ہوں۔۔اللہ کرے یہ رسالہ جلد ہمیں کتابی شکل میں مل سکے۔سب لکھاری بہنوں کے لیے بے شمار محبتیں اور دعائیں۔

امتہ الرشید میرپور آزاد کشمیر

السلام علیکم

آبگینے دن بدن ترقی کے زینے چڑھتا ہوا علم وادب کی بہترین جگمگاتی تحریریں۔ ہاں جی درس القرآن سے لیکر آخر تک سب اتنا معلوماتی کہ دل چاہے کہ اب شروع کیا ہے تو مکمل مطالعہ کر کے ہی اٹھیں۔کس کس تحریر کا ذکر کریں کس کا نہ کریں سب ہی قابل تعریف ہیں۔ ام المومنین حضرت عائشہ رضی اللہ عنہ کے بارے میں آخری قسط بھی بہت پسند آئی جزاک اللہ۔طاہرہ زرتشت صاحبہ کی موجودہ کرونا وائرس کی تباہ کاریوں پر نہایت عمدہ تحریر۔ قوموں کا فخر ماں، صفیہ نسیم صاحبہ نے بہت پیارا لکھا واقع ماں ہی تو پہلی درس گاہ ہوتی ہے۔اور کیا کہنے آپا بانو قدسیہ کی تحریر نے بہت متاثر کیا مرد ہوس کا پجاری۔بہت سچائی نظر آئی۔ پنجابی بولنے سے ہم کیوں شرماتے ہیں ڈاکٹر طاہرہ کاظمی کی تحریر نے بہت متاثر کیا۔ اصول محبت،اعتماد اورتوجہ، زندگی گزارنے کے تین سنہری اصول، زین خٹک نے بہت اچھے طریقے سے ہماری راہنمائی کی۔ ڈاکٹر سارہ قریشی کے فنی کیریئر کے بارے میں جان کر بہت اچھا لگا۔عورت زندگی کے ہر میدان میں مرد کے شانہ بشانہ کام کر سکتی ہے۔

اور بھی سب لکھنے والوں کو اور آبگینے کی پوری ٹیم کو مبارکباد اللہ تعالی مزید بہتر سے بہتر کرنے کی توفیق عطا فرمائے آمین۔

امتہ الوودود جرمنی

مکرمی و محترمی!                      السلام علیکم و رحمة اللہ و برکاتہ

بہت خوبصورت مجلہ فروری اور مارچ یکے بعد دیگرے موصول ہوئے۔ زیرِمطالعہ رہے اوربہت تفصیل سے۔ ماشاء اللہ بہت محنت کی جاتی ہے قارئین کے ذوقِ مطالعہ کی تسکین کے لئے۔ جزاکم اللہ احسن الجزاء۔سبھی لکھنے والے ماشاء اللہ پہنچے ہوئے لوگ ہیں۔ کس کس کا ذکر کروں۔ ہر مضمون ایک سے ایک بڑھ کر۔ اسلامی تاریخ کے اوراق کی ورق گردانی کرتے ہوئے ذہن پھر انہی دنوں کی یادوں میں لوٹ جاتا ہے۔ جب سکول کالج جاتے تھے۔ ام المومنین رضی اللہ تعالی عنہا کے حالات و واقعات پڑھ کر یہی دعا نکلتی ہے کہ اللہ تعالی ہمیں بھی ان کے نقش قدم پر چلنے کی توفیق عطا فرمائے۔آمین

اچھا ہے’’گاہے گاہے باز خواں ایں قصہء پارینہ را‘‘آپ سب کے لئے ’’اللہ کرے زورِ قلم اور زیادہ‘‘۔

صفیہ چیمہ فرینکفرٹ

ہائے کتنی شدت سے انتظار تھا تیرا

تیری دستک پہ دل تھام کے بھاگے

کیا کرتی کسی اور کا تو پتہ نہیں مگر میں نے تو خلاف قانون (کوروناقانون) سب کی آنکھ بچا کر تمھیں سینے سے لگایا اور جی بھر کے تیرا حسن اپنی آنکھوں میں اتارا۔

آبگینے، کیا کہنے تیرے حسن کے، دن بدن حسین سے حسین تر۔ تجھے سنوارنے والے بھی تو اک حسین تخیل کے مالک ہیں۔کس کس کی تعریف کروں۔ہر طرح کے ذوق کی تسکین ہوتی ہے یہاں۔

درس القران،سلسلہ احادیث و اسلامی تعلیمات بہت لاجواب اور وقت کی اہم ضرورت۔ محترمہ طاہرہ زرتشت ناز صاحبہ کی تحریر ’’آنکھ کے پانی سے لوگو…‘‘بہت پر اثر۔ مبشرہ ناز صاحبہ کی ’’چکر کھاتی چرخی ‘‘پڑھتے ہوئے ماں کا آخری دیدار نہ کرنے کی حسرت نے آنکھیں اشک بار کر دیں۔منزہ سلیم صاحبہ کی تحریر ’’پر اثر کلام کا اعجاز‘‘

’’دل ہی تو ہے نہ سنگ خشت ‘‘درد سے بھر نہ جائے کیوں۔

آبگینے کی تمام تحاریر معیار ی ہر طرح کے موضوعات سے مزین ہیں۔ حمیرا نگہت صاحبہ گوشہ ادب میں ہماری ہر طرح کی ادبی پیاس کے سامان فراہم کر دیتی ہیں۔باری آپا کا پر اثر کلام، واہ کی داد تو کم پڑتی ہے۔ سعدیہ تسنیم صاحبہ کا بہت عمدہ کلام سب کے دل کی آواز حمیرا نگہت صاحبہ کا لاجواب کلام زندہ حقیقت ان کے کلام میں الفاظ بولتےہیں۔ منفرد انداز کی منفرد شاعرہ ہیں۔شوکت سلطانہ کے آئینےنے صرف انہیں ہی نہیں سب کو احمق بنا رکھا ہے۔ مدیرہ اور انچارج گوشہ ادب اتنے خوبصورت معیاری میگزین کی اشاعت پر دلی مبار باد کی مستحق ہیں۔

امتہ الجمیل سیال جرمنی

اپریل ۲۰۲۰

پیاری حمیرا

کیا کہنے بھئ۔آبگینے کا نیا شمارہ بہت خوبصورت۔تحریریں اور منظوم کلام ایک سے بڑھ کر ایک۔ آئندہ بھی ان خوبصورت شماروں سے لطف اندوز ہونگے ان شاءاللہ۔

امتیاز بٹ ہالینڈ

پیاری حمیرا جی

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

مارچ کا دلکش شمارہ ملا۔بلا شبہ اس بار بھی اپنے معیار کو برقرار رکھا۔ قارئین کے لیے بہت عمدہ مضامین شامل تھے۔اسلامی تعلیمات میں ام المومنین حضرت عائشہ صدیقہ کے بارے میں جامع مضمون لکھا گیا۔جو ان کی زندگی کے بے شمار پہلوؤں کا احاطہ کرتا ہے۔اگلی قسط کا انتظار رہے گا۔’’خلق خدا سے ہمدردی اور حسن سلوک‘‘ جیسےتربیتی مضامین شامل کرنے سے بہت کچھ سیکھنے کو ملتا ھے۔رسالے میں شامل ہر موضوع اپنی اپنی جگہ افادیت کا حامل ہے۔صحت اور غذائیت کے مضامین بھی عمدہ تھے۔’’چڑیوں کے پنکھ‘‘ نے بچپن کی یاد تازہ کر دی۔ یہ کہانی کبھی نہیں بھولی۔ھومیوپیتھی میں علامتیں اور ان کا علاج نئے انداز سے شامل کیا گیا۔اچھا لگا۔ ’’میاں محمد بخش کی فاختہ‘‘ نے بہت متاثر کیا۔(میاں محمد بخش کا مزار یہاں سے تقریباً 5 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے) مبشرہ ناز اور خنساء رفعت کی تحریریں آنکھیں نم کر گئیں۔ دیگر تمام لکھاری بہنوں کے مضامین اور شاعرات کے کلام بھی بہت عمدہ تھے۔ان سب کی خوبصورت کاوشیں اس رسالے کی زینت بنتی ہیں اور ایک مکمل رسالہ ہمیں پڑھنے کو ملتا ہے۔مدثرہ عباسی، ان کی ٹیم اور سب بہنوں کے لیے بہت دعائیں۔

امتہ الرشید آزاد کشمیر

 السلام و علیکم ورحمة اللہ

جزاک اللہ حمیرہ جی.. خاکسار نے سارا شمارہ پڑھا ہے.. بہت ہی معلوماتی، ادبی ادبی سا.. مختلف عناوین سمیٹے .ایکدم علمی گہوارہ.نت نئے ذائقے لئے ایک دعوت برائے قارئین ہے.. بہت بہت شکریہ.. ایک کمی جو میں نے اپنی فرسودہ عادت کی وجہ سے محسوس کی وہ تھی اسکا کاغذی پیرھن اور خوشبو.. لیکن شائد وہ میری اپنی کمزوری ہے, جو زمانے کی رفتار کا ساتھ نبھانے میں نخرے دکھاتی ہے..اب بھلا یہ نخرے کون اٹھائے

مومنہ، ہالینڈ

السلام علیکم و رحمتہ اللہ!

ماشاء اللہ ماشاء اللہ!تہاڈیاں محبتاں دا بہت مقروض ہاں لالا جی! ماہ مارچ دا رسالہ آبگینہ پڑھن نوں ملیا، بہت شکریہ!

آبگینہ بلا شبہ ہر لحاظ نال اک مکمل تے جامع رسالہ اے، اسلامی، صحت، شاعری، معلوماتی، سائنسی، ادبی، گھریلو بیبیاں لئی، تفریحی غرضیکہ ہر شعبہ ہائے زندگی لئی کُجھ نہ کُجھ تحریر موجود اے،منٹھارم ہسدے تے وسدے راھوو شالا، بہت خوبصورت رسالے لئی میرے ولوں ڈھیروں ڈھیر دعاواں تے بہت بہت ودھائیاں تے نؤلکھ مبارکاں جناب۔

رانا محمد اکرم شادپاکستان

حمیرا جی میں باقاعدگی سے آ بگینے پڑھتی ہوں۔ مجھے آ بگینے بہت پسند ہے۔ میں اس میگزین کو اپنی فیملی کو بھی بھیجتی ہوں سب اسے شوق سے پڑھتے ہیں۔ میں لکھتی نہیں لیکن مجھے آبگینے پڑھنا اچھا لگتا ہے۔

امتہ النصیر پاکستان

محترمہ مدیرہ صاحبہ اداب

شمارہ مارچ 2020 جس کا شدت سے انتظار تھا کا مطالعہ کیا ماشااللہ ابگینے رسالہ کو موتیوں سے مرقع پایا اور یہ دن بہ دن نکھرتا جا رہا ہے اور یہ قارئین کےلئے مفید معلوماتی ہے۔ ان کے تمام منصفین لکھاری اور پوری ٹیم کی میں تہہ دل سے مشکور ہوں اور مبارک باد دینا چاہتی ہوں جنھوں نے اسکو محنت اور لگن سے ہمیں خوبصورت دیدہ زیب ابگینے دیا۔یقینی طور پر ہر قاری اس سے فیض یاب ہو گا۔ اسکی ہر تحریر۔ نظم۔ غزل اور دیگر شعبہ جات کے مضامین نہایت عمدہ۔ انمول موتیوں کی طرح اور دلچسپ ہیں۔ اخر پر ایک تجویز دینا چاہتی ہوں اسکے صفات میں اضافہ کردیں تاکہ اچھے مضامین مذید پڑھنے کو ملیں۔

صفیہ بخاری ملبورن آسٹریلیا

مارچ ۲۰۲۰

پیاری حمیرا جی

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ۔فروری کا رسالہ پوری آب و تاب سے ملا۔گزشتہ شماروں کی طرح یہ شمارہ بھی اپنی مثال آپ تھا۔شروع سے آخر تک ہر موضوع چاہے وہ دینی ہو سیاسی ہو یا افسانہ،تعلیمی و تربیتی اور صحت کے حوالے سے ہو، مضمون ہو یا شاعری غرضیکہ ہر چیز قابلِ تحسین ہے۔ رسالہ ختم ہو جاتا ہے پڑھنے کی تشنگی باقی رہ جاتی ہے۔اس لیے اگر اس کے صفحات بڑھا دیے جائیں تو قارئین پر نوازش ہوگی۔امید ہے اس کے بارے میں غور کیا جائے گا۔

تمام بہنوں کی خدمت میں السلام علیکم جن کی خوبصورت تحریریں اس رسالے کی زینت بنتی ہیں۔اللہ کرے یہ رسالہ کامیابی کی منزلیں تیزی سے طے کرتا چلا جائے آمین۔

امتہ الرشید آزاد کشمیر

السلام علیکم

ماہ فروری کا شمارہ پڑھا۔ آبگینے ماشاء اللہ ترقی کی طرف گامزن ہے۔ بہت نکھار آرہا ہے کس کا ذکر کریں کس کا نہ کریں سب کی محنت بہت عمدہ، قوت حافظہ حفاظت، آمین اُمّ المؤمنین حضرت سودہ کا ذکر خیر۔ طاہرہ زرتشت ناز صاحبہ کی غزل کریں کچھ خوف،اب رب الوری کا، ستم لوگوں پر کیوں ڈھا رہے ہیں بہت عمدہ، اچھی آپا کی تحریر بہتان کیا ہے نیز تعلیم کو درپیش چیلنجز سے کیسے نمٹا جائے(ایک بہت مفید معلومات) حمیرا نگہت صاحبہ کی تحریر دل ہی تو ہے نہ سنگ وخشت، بہت متاثر کیا اس تحریر نے،صدیوں سے عورت یہی سہتی آئی ہےناجانے کب تک یہ سلسلہ رہے گا ہر دکھ کا سکھ ہوتا ہے جیسے اس تحریر میں اجالا ہوااسکی زندگی میں۔

اور صحتمند جلد کےلیے ضروری ایسڈ بہت فائدہ مند، اللہ تعالی اور ترقی عطا فرمائے آمین

 امتہ الودود جرمنی

فروری کا شمارہ آبگینے حمیرا جی کے توسط سے ملا، پڑھ کر احساس ہوا کہ اس سے قبل اتنا مکمل اور جامع رسالہ کبھی پڑھنے کو نہیں ملا.ہر نوع کی معلومات، مذہبی، ادبی،سائنسی، تفریحی اور گھریلو ٹوٹکے غرضیکہ ہر شعبہ زندگی سے متعلق نہایت عمدہ تحریریں قاری کے لیے موجود ہیں.محترمہ سعدیہ تسنیم کی تحریر (رب جانے) ان کی نثر نگاری میں مہارت کا منہ بولتا ثبوت ہے. محترمہ حمیرا نگہت کا افسانہ (دل ہی تو ہے نہ سنگ و خشت) پڑھا، روح کی گہرائیوں میں اترتا ہوا محسوس ہوا،، یاس و آس کے پیراہن بدلتا یہ افسانہ مجھے بے حد پسند آیا.. بشریٰ بختیار خان کی تحریر (رشتے ختم ہوتے جا رہے ہیں) میں نہایت عمدگی سے آج کے معاشرتی مسائل کو بیان کیا گیا ہے.. اچھی آپا کی کی تحریر (محبت جنگ اور فرض) کے لیے وہ بجا طور پر داد کی مستحق ہیں،، ایک حساس تحریر جسے پڑھ کر آنکھیں نم ہو گئیں.. اس کے علاوہ چبھن،، وقت رکتا نہیں،، یادوں کے الاو،، متاعِ حیات نے بھی بہت متاثر کیا.. آبگینے ایک منفرد اور بامقصد رسالہ ہے جس کے لیے آبگینے کی ٹیم کو میں تہہ دل سے مبارک باد پیش کرتی ہوں کہ دیارِ غیر میں رہتے ہوئے بھی وہ مقامی رسالوں سے بھی بہترین کام کر رہے ہیں..

آصفہ بلال.. پاکستان

مکرم محترم ایڈیٹر صاحب !(آبگینے)

السلام علیکم و رحمتہ اللہ و برکاتہ

گذشتہ دو ماہ کے آبگینے کے دونوں شمارے خاکسار کے سامنے ہیں۔ سب سے اہم بات جو مجھے پسند ہے۔ وہ یہ کہ اس کو ہاتھ میں لیتے ہی یہ اندازہ ہو جاتا ہے کہ اس کی بنیاد خدا تعالٰی کی پُر حکمت تعلیم کے مطابق رکھی گئی ہے۔اور اپنے آقا ومطاع آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ بھی قاری کا رشتہ مضبوطی سے استوار رکھنے کی کوشش کی گئی ہے۔

اسلام کی خوبصورت تعلیم و تربیت کے اُصولوں کو کہیں بھی فراموش نہیں کیا گیا۔ موجودہ دور میں اپنی اقدار کو قائم رکھنا اور حق بات برملا کہنا یقینًا ایک مشکل امر ہے۔ ہر لحاظ سے نہائت دلکش دیدہ زیب اور معیاری خواتین ڈائجسٹ ہے۔ اُردو ادب کی ترویج و ترقی کے لئے آپ کی مساعی قابلِ قدر ہیں۔ خاص طور پر نئے لکھنے والوں کو آپ نے بہترین موقعہ فراہم کیا۔ تمام لکھنے والی خواتین کی کوشش بھی قابلِ ستائش ہے۔ اور آپ سب اس حسین کاوش پر مبارکباد کے مستحق ہیں۔ چھوٹے چھوٹے افسانچے، کہانیاں، دیگر علمی اور معلوماتی مضامین سب عمدہ ہیں۔ شعرو شاعری نے اس کے حسن کو چار چاند لگا دیئےہیں۔ اللہ کرے کہ ترقی کی منازل سرعت کے ساتھ طے ہوتی رہیں۔ آمین۔

 خاکسار طاہرہ زرتشتVitemporest ant endandio

فروری ۲۰۲۰

ماہنامہ آبگینے کے دو شمارے نظروں سے گزرے پڑھے ، معلوماتی ہونے کے ساتھ ساتھ دینی اور اخلاقی مضامین و افسانے اپنے اندر سموئے لکھاریوں کی قلم قارئین کو بہت کچھ سوچنے پر بھی مائل کرتی ہے۔ محترمہ حمیرا نگہت صاحبہ کی ممنون ہوں جنہوں نے اس خوبصورت ڈائجسٹ سے متعارف کروایا۔ اللہ کرے زورِ قلم اور ذیادہ۔ بہت محنت قلم کام ہے اللہ تعالی سب شرکائے کار کو جزاء دے اور آن لائن اجراء مبارک فرمائے

دعاؤں کے ساتھ

صفیہ چیمہ فرینکفرٹ جرمنی

محترمہ حمیرا نگہت صاحبہ! اسلام علیکم

آبگینے۔۔۔بہت پیارا ڈائجسٹ۔ہے جو ہمارے ادبی ذوق کی تسکین کا باعث ہے۔اس میں شائع کردہ مضامین ہوں یا کہانیاں ہر چیز اپنے اندر کمال کی خوبی اور بصیرت لیئے ہوئےہے میں آپ کو اور آپکی تمام ٹیم کو مبارکباد پیش کرنا چاہتی ہوں کہ آپ سب کی کوشش سے ا اور محنت سے یہ میگزین کامیابی حاصل کر رہا ہے ہیں۔اللہ اس رسالے کو مزید کامیابیاں عطا فرماتا چلا جائے آمین

رفعت اسلم پاکستان

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ پیاری حمیرا جی

آبگینے کا ماہ جنوری کا شمارہ کچھ نئی تبدیلیوں کے ساتھ ملا۔حسب معمول خوبصورت آغاز کے ساتھ بھرپور شمارہ تھا۔ام المومنین حضرت خدیجہ رضی آللہ تعالیٰ عنہا کے بارے میں جامع مضمون شامل تھا۔امید ھے تمام امہات المومنین کے بارے میں آئیندہ قسط وار مضامین شامل کیے جاتے رہیں گے۔دیگر مضامین بھی نہایت عمدہ،معلوماتی اور معیاری تھے۔‘‘وڈے اماں جی،موم کی گڈی،مہندی کی خوشبو اور بہتان اور غیبت « اپنی مثال آپ تھے۔‘‘یہ وادیاں یہ پربتوں کی شہزادیاں‘‘ کیا ہی خوبصورت عنوان ھے۔اس نے خوابوں کی دنیا میں پہنچا دیا۔تمام لکھاری بہنیں اور آبگینے کی ٹیم مبارکباد کی مستحق ہیں جن کی کاوشوں کی وجہ سے ہمیں گھر بیٹھے اتنا عمدہ رسالہ مل جاتا ھے۔سب کا فرداً فرداً اگر لکھا جائے تو نامہ طویل ہو جائے گا۔آپ کا بہت بہت شکریہ جو ہمیں یاد رکھتی ہیں۔اللہ تعالیٰ آپ کو ہمیشہ خوش رکھے آمین ثم آمین

امتہ الرشید آزاد کشمیر

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

آبگینے کا دسمبر ڈاہجسٹ بھی ماشاءاللہ خوبصورت ٹاہٹل کے ساتھ ملا۔ساری ٹیم مبارک باد کی مستحق ہے ماشاءاللہ تیار کرنے والے بھی، شاعری میں باری آپا،طاہرہ زرتشت،امتیاز بٹ،بشری وحید، مبشرہ ناز،سلمی جی،حمیرہ نگہت،کاکلام بہت عمدہ واعلی معیار کا اداریہ،اسلامی تعلیمات بھی پڑھ کر اگلی قسط کا انتظار۔۔۔۔ازواج مطہرات کاسلسلہ بھی شروع کیا جائے گا جزاک اللّہ، ایک گھر کی سبق آموز کہانی ،،بہت عمدہ طاہرہ جی کی اثرانگیزتحریر۔امتہ البا سط ایاز صاحبہ کا مضمون، لوگ کیا کہیں گے،،غور طلب ہے۔ پیسہ پھینک تماشا دیکھ،،یہ سانسیں اب کوئی دم ہیں،نیلی آنکھیں۔تمام نثر نگار اسقدر منجھے ہوئے قلمکار ہیں ماشاءاللہ ایک سے بڑھ کر ایک۔ میگزین اللہ کے فضل سے دن دگنی رات چوگنی ترقی کررہا ہے

برکت ناصر کراچی پاکستان

السلام علیکم

نئ نویلی دلہن کے نکھرتے روپ کی طرح آبگینے کا رنگ و روپ بھی اپنے اندر اک رنگینی و دلکشی لئےہوئےہے

درس القرآن اک آبگینہ حیات جوراہ نجات ہے تمام تحاریر ایک سے بڑھ کر ایک لاجواب چمک اتنی کہ ہاتھ میں آتے ہی آبگینوں کی چمک یہ سوچنے پر مجبور کر دیتی ہے کہ پہلے کس رنگ کا آبگینہ چن کے اپنی تشنگی مٹائی جائے

خدا اور رسول کے فرمان سے لیکر تمام مسلم خواتین مبارکہ کے خوبصورت روپ جو ہماری زندگی کے سجنے سنورنے کی کلید ہیں نظم ’’امی جان کے بعد ‘‘کو اشکبار آنکھوں سے دل میں اتارا حمیرا ناصر صاحبہ کا لاجواب باکمال کلام دل و نظر کی تشنگی مٹانے کے ساتھ روح کو سرشار کر دیتا ھے ان کی شاعری میں موسیقی کا پر سکون احساس ملتا ھے

سلمی جی کی وڈے اماں جی بہت خوبصورت انداز تحریر عام فہم اور حقیقت کے بہت قریب معاشرتی ٹچ لیئے ہوئے ہر گھر کی وڈے اماں جی ، پیاری طاہرہ زرتشت ناز صاحبہ نےاسمارٹ فون کے نقصانات پہ بہت خوبصورتی سے معاشرتی پہلووں کو اجاگر کیا ہے۔

’’حادثہ‘‘  میں طاہرہ جی نے خوبصورت الفاظ میں اپنے آحسا سات و جذبات کو اس طرح بیان کیا ھے کہ پڑھنے والا بھی اس درد کو محسوس کئے بغیر نہیں رہتا ۔ بشری وحید جی کی قافیہ ردیف میں الفاظ کی حسین جنگ بہت بھا ئی۔ فہمیدہ مسرت شوکت احمد سعدیہ تسنیم سحر جی کا خوبصورت پر اثرکلام بہت خوب لکھتی ہیں۔

قدسیہ عالم جی کی مہندی کی خوشبو ہم نے جرمنی تک محسوس کی بہت سوندھی خوشبو جو پیا ملن کی آس میں روز ھاتھوں کو سجا دیتی ہےرفعت اسلم جی کی موم کی گڑیا روح میں چھپے درد اور معصوم جذبات و احساسات کی چیخ پکارمیں خوبصورت الفاظ کی عکاس ہے۔

مائیں نی میں کنوں آکھاں درد وچھوڑے دا حال نی اچھی اپا کی خوبصورت تحاریر پہ ہمیشہ توجہ مرکوز رہتی ہے

 صحت سے متعلق چھالیہ انجیر سے متعلق معلومات نہائت عمدہ ۔چھالیہ چھوڑ انجیرکھایئے بہت عمدہ ڈائجسٹ۔

امتہ الجمیل سیال جرمنی

دسمبر ۲۰۱۹

حمیرا نگہت صاحبہ ! آبگینے ماشاءاللہ جتنا پڑھا لاجواب تھا بہت مزہ آیا اللہ تعالی کرے کہ یہ رسالہ مزید  ترقیاں کرے بہت پیارارسالہ ہے تمام ٹیم خوب محنت سے رسالہ تیار کررہی ہے اللہ تعالی کامیاب کرے آمین

ثمینہ انجم پاکستان 

ڈائجسٹ آبگینے

ایک بہت شاندار رسالہ ہے ۔اس میں لکھی گئی تحریرات  علمی و ادبی خزانہ لیئے ہوئے ہوتی ہیں۔مجھے خاص طور پر یہ ڈائجسٹ بہت پسند ہے اور شدت   سے اگلے شمارہ کا انتظار رہتا ہے۔

رفعت اسلم پاکستان

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ پیاری حمیرا جی آج سفر کے دوران ماہ نومبر کے آبگینے کو ایک ہی نشست میں پڑھنے کا موقع ملا ھے۔سفر بھی تکمیل کو پہنچا اور رسالہ پڑھنے کا لطف بھی اٹھایا۔عورتوں کے حوالے سےتحریریں بہت عمدہ تھیں۔اس بار بھی پہلے کی طرح تمام مضامین لا جواب تھے بشریٰ بختیار،سعدیہ تسنیم۔اچھی آپا،امتہ الجمیل کی بہت عمدہ تحریریں رسالے میں شامل تھیں۔تیسری جنس کے حوالے سے تحریر اداس کر گئی۔عظمی وقار اور طاہرہ زرتشت کی  ماں کی حوالے سے شاعری پڑھ کر آنکھیں نم ہو گئیں۔اردو سیکھنے کا صفحہ،بزم اطفال اور بیوٹی ٹپس بھی بہت مفید تھیں۔امید ہے آئندہ بھی مفید معلومات ہمارے علم میں اضافے کا باعث بنتی رہیں گی۔مدثرہ عباسی اور ان کی ٹیم اور تمام لکھاری بہنوں کا بہت شکریہ جن کے دم سے اتنا خوبصورت اور معیاری رسالہ گھر بیٹھے ہمیں مل جاتا ہے۔جن بہنوں کے نام رہ گئے ان کی بھی شکر گزار ہوں۔بہت دعائیں آپ سب کے لیے۔

امتہ الرشید میرپور آزاد کشمیر

بہت پیاری چھوٹی اپیا ! السلام وعلیکم نومبر کا آبگینے ملا پڑھا بہت مزہ آیا ادبی کہانیاں اور اسلامی مضامین نیز شاعری کاانتخاب ہرکاوش لکھنے والوں کی اعلی صلاحیتوں اور عمدہ ذوق کا منہ بولتا ثبوت ہے ساری ٹیم مبارک باد کی مستحق ہے خدا آپ کو اور پوری ٹیم کوبڑھ کے ہمت عطافرمائےاور مزید ترقیات سے نوازے آمین !  اچھی آپا ،آسٹریلیا

السلام علیکم ورحمتہ اللہ آبگینے  کانومبر کاشمارہ بھی ماشاءاللہ زبردست۔۔۔درس القرآن میں حضرت عائشہ صدیقہ رضہ پر تہمت لگانے والوں کی بذریعہ وحی بریت۔۔۔۔کی آیات کی تشریح بمعہ حوالہ جات۔۔۔۔بہت عمدہ ۔ مدثرہ عباسی صاحبہ نے بہت عمدہ اداریہ لکھا حضرت خلیفۃ المسیح اول وخلیفتہ المسیح الثانی رضہ کےبیان فرمودات دلچسپ واقعات پڑھنے سے تعلق رکھتے ہیں۔ میگزین کے ابتدائی بارہ صفحات پر اسلامی تعلیمات کے متعلق بہترین معیار کے مضامین بہت عمدہ محنت سے پیش کیے گئے ہیں خطبہ حجتہ الوداع۔۔۔۔ہمارے آخرین کے دور تک تاریخی طور پر لانا بہت عمدہ مثال ہے جزاک اللّہ۔

خوبصورت تحریریں منجی ہوئی قلمکار مبشرہ ناز، اچھی آپا،عطیہ بھٹی،خنساء رفعت،    فوزیہ منصور،بشری بختیار ،امتہ جمیل سیال،ہرکہانی اپنا رنگ رکھتی ہے اس میں سعدیہ تسنیم سحر صاحبہ کی تحریر بہت فکر انگیز ہے۔کاش ہم رحمی رشتوں کی قدر کریں۔شاعرات میں طاہرہ زرتشت صاحبہ اور عظمیٰ وقار کا ماں  کی عظمت پر بہت عمدہ کلام، بشری وحید،فوزیہ بٹ،شوکت سلطانہ کا کلام بھی بہت عمدہ،، جا!ری دنیا راہ لگ اپنی منہ تیرے لگتا ہے کون،تیری چالو ں کے آگے ہےایک وظیفہ! مولا بس اور اپنی حمیرا جی کاتوجواب نہیں۔۔۔۔۔۔

برکت ناصر کراچی پاکستان

السلام علیکم۔ ماشاء اللہ بہت خوبصورت  رسالہ ہے ۔ساری ٹیم کی محنت سے عمدہ ادب پاروں اور شاعرات کے کلام سے مزین ڈائجسٹ اپنے معیار کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔ اگلے رسالے کا شدت سے انتظار رہتا ہے ۔

 مسرت چوہدری جرمنی

گزشتہ

السلام علیکم و رحمتہ اللہ و برکاتہ

مدثرہ جی !آبگینے کی تمام تر تحاریر درس القرآن ، اچھی آپا) جو ہماری دوست بھی ہیں ) بشرٰی وحید کے افسانچے پڑھے ۔

اداریہ تو بے حد  پسند آیا۔ باری آپا ، اور قرآن والا حصہ پڑھا یقین کریں اتنا لطف آیا کہ بیان کرنا مشکل ہے ۔ حمیرا نگہت کاافسانہ ’’پریت کی جوت پڑھا ۔‘‘ بہت اچھا لکھا زبردست نثر بھی اور نظم بھی کمال ہے۔

طاہرہ زرتشت ناروے

السلاوعلیکم۔

ڈیئر مدثرہ باجی

آبگینے ہاتھ میں آتے ہی ہلچل ہونے لگی کہ فورا پڑھا جائے۔اور کسی قدر کامیابی بھی ہوگئی۔ماشاللہ بہت سبق آموز مضامین مشاعرہ کی تفصیل پڑھ کے پھر سے دل نے شکایت کی کہ کیوں miss کیا چلیں اگلی دفعہ سہی۔امید پہ دنیا قائم ہے۔

خدا آبگینے کو ترقیات سے نوازے۔

وسیمہ احمد جرمنی

السلام علیکم ورحمتہ اللہ کیا حال ہے۔آپکےخوبصورت ،میگزین آبگینے،،صورت بھی حسیں پڑھنا شروع کیا تو عمدہ اداریہ درس القرآن میں بہتان اور بدظنی سے اجتناب کی اعلیٰ ترین مثال اور نمونہ حضرت عائشہ صدیقہ رضہ کی گواہی سورہ النور سے پیش کرنا  ماشاءاللہ/(حوالہ حقائق الفرقان)

پھر مدثرہ عباسی صاحبہ کا حضرت مریم علیہ السلام پر بڑا تحقیقی مضمون ، ہماری آپا امتہ الباری ناصر صاحبہ کی،اللہ خیر رکھے،سبق آموز کہانی ۔۔مبشرہ ناز جی کی،،دوگھوڑابوسکی،پیھکااپنا پیغام عمدہ انداز میں پہنچاتا ہے۔

’’پریت کی جوت ‘‘اٹھ منائیے یار حقیقی ،روح ہووے خوشحال نی مائیں ، جہاں کیتے عشق دےسجدے،جگ تےبنےمثال نی مائیں ۔۔۔ کمال کی تحریر شاعری نے چار چاند لگا دئیے ہروہ تحریر جس کی سمت خدا تعالیٰ کی طرف مائل ہو میرادل اس پر سو فیصد نمبر دینے کے لئے تیار۔

اچھی آپا کی تحریر،عام مرد،اورسعدیہ تسنیم سحر کی دعا پڑھ کر مردوں کی ذہنیت پر ماتم کرنے کودل چاہتا ہے ۔۔بشری وحید کی تحریر مناسب وقت یہ اس دور کا اپنا پیدا کردہ المیہ ہے جس کی سمت درست نشان دہی کی ہے۔۔۔۔مشاعرہ کی روداد بھی زبردست ہے۔۔۔۔‌‌باقی انشاء اللہ اگلی قسط میں۔

برکت ناصر کراچی پاکستان

السلام علیکم

آبگینے ماہ اکتوبر کا شمارہ ابھی سارا مطالعہ کیا ے ۔

ماشاء اللہ وقت کے ساتھ بہت نکھار آرہا ہے سب مبارکباد کے مستحق ہیں ۔

سب مضامین بہت عمدہ ہیں ۔

تربیت اولاد سنت نبوی کی روشنی میں ۔اس میں اولاد میں عدل کا واقعہ بہت متاثر کن ہے ۔مناسب وقت، تحریر بہت عمدہ، آجکل کے حالات کی مکمل عکاسی کرتی ہوئی تحریر، اس پر حضور اقدس ایدہ اللہ تعالی کا ارشاد یاد آگیا کہ تعلیم کے دوران ہی اچھا رشتہ ملے تو شادی کر دینی چاہیے ۔

بشری رحمان کی تحریر بھی بہت پسند آئ۔(میں ان کی فین ہوں )ان کے کئ ناول پڑھے ہیں ۔

پریت کی جوت، بہت منفرد اور سبق آموز تحریر معاشرے کی ایک سچی حقیقت ، تحریر کے ساتھ دل چھو لینے والے عمدہ اشعار ۔

امتہ الودود جرمنی

ماشاء اللہ مدیرہ صاحبہ ہماری طرف سے مبارکباد قبول کریں آبگینے ایک اچھی کاوش ہےاللہ تعالی برکتوں سے نوازے اور رسالے کو چار چاند لگائے۔ آمین

سیدہ بشری لاہور (باکستان)

السلام علیکم ورحمۃ اللہ۔ آبگینے کا دوسرا شماره نظر سے گزرا دل میں اتر گیا ٹائیٹل کور سے لیکر خدا کی حمدوثنا فرمان رسول ہرچیز بے مثال شروع سے آخر تک ہر تحریر میں صنف نازک کی تصویر کے خوبصورت رنگ کہ دل بے اختیار کہہ اٹھا روشن تیرے وجود سے یہ کائنات ہے۔

ہر تحریر سے بھر پور انصاف پر تمام لکھاری بہنیں مبارک باد کی مستحق ہیں مبشره ناز صاحبہ اور سعدیہ تسنیم صاحبہ کا منفرد اچھوتا انداز تحریر بہت بھایا ۔ تمام شاعرات نے کمال شاعری کی۔ پہلے شمارے میں بھی حمیرا نگہت صاحبہ کے ساحل عشق نے بحر طلاطم کی بپھری موجوں کی تڑپ کچھ اس انداز سے بیان کی کہ لفظ لفظ دل میں اترتا گیا  انچارج گوشہ ادب آبگینےنگہت صاحبہ اور مدیره مدثرہ عباسی صاحبہ خوبصورت اشاعت پر خصوصی مبارک باد کی مستحق ھیں (امتہ الجمیل احسان جرمنی)

السلام و علیکم ۔علم و ادب کے فروغ کے لئے بہت سے رسائل اور ڈائجسٹ آن لائن اپنی خدمات بجا لارہے ہیں ۔ ان میں سے ایک ڈائجسٹ آبگینے کے نام صرف خواتین کے علمی ،ادبی اور مذہبی تشنگی کو مٹانے کے لئے نکالا گیا ہے ۔اس میں ادبی تحریریں بھی ہیں ،مذہبی تسکین بھی ہے، علمی لذت بھی ہے ۔ غرض کہ یہ رسالہ ہر ذائقے کو اپنے اندر سموئے ہوئے ہیں ۔ دلفریب، دیدہ زیب  رنگوں کی بہار ہے، تحریریں معیاری ہونے کیساتھ ساتھ دلچسپ بھی ہیں ۔ دعا ہے کہ اللہ مدثرہ عباسی صاحبہ کی اس کاوش کو پھل لگائے ۔ اور آپ خواتین کی نمائندگی کرتے ہوئے دینا بھر کے نگینوں سے اسے سجا دیں ۔ ہر آنکھ  اس سے فیضیاب ہو ۔آمین(فوزیہ منصور پاکستان)

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ ۔آبگینے‘‘ کی کامیاب اشاعت کے لیے بہت بہت مبارکباد۔مصباح کی اشاعت بند ھونے کی وجہ سے جو کمی ھو گئی تھی وہ اس رسالے نے پوری کر دی ہے۔ میں نے پرنٹ نکلواکررسالے کو شروع سے لے کر آخر تک پڑھا ہے کیونکہ جو مزہ رسالے کو ھاتھ میں لے کر  پڑھنے میں ہے وہ موبائل میں کہاں ۔تمام مضامین ،افسانے،عالمی مشاعرہ،مغل دسترخوان،ربوہ کا تاریخی پس منظر، عورتوں کے حوالے سے مضامین سب ایک سے بڑھ کر ایک تھے۔گھنگھریوں والا پراندہ کہانی بہت پسند آئی۔اتنا معلوماتی مجلہ شائع کرنے پر تمام ٹیم مبارکباد کی مستحق ہے۔اللہ کرے یہ رسالہ دن دگنی اور رات چوگنی ترقی کرتا چلا جائے۔اگلے شمارے کا بے تابی سے انتظار رہے گا۔جزاک اللہ( امتہ الرشید ، آزاد جموں و کشمیر)

اسلام علیکم و رحمتہ اللہ وبرکاتہ ۔آبگینے ماہ ستمبر کا مطالعہ کیا ے ماشاء اللہ پہلے شمارے سے بھی بہتر شمارہ ہےبہت مبارک ہو ۔حمیرا نگہت صاحبہ کا کلام بہت اچھا لگا ۔میں بھی کہتی ہوں کہ اظہار ضروری ہوتا ہے ۔ بے حد عمدہ ڈائجسٹ کی اشاعت پرپوری ٹیم کو مبارکباد ۔(امتہ الودود جرمنی)

السلام علیکم ورحمۃ اللہ۔بہت بہترین شمارہ ہے۔ میں نے اسے مکمل پڑھا اورنبی پاکﷺکے  بارے میں اور تمام اسلامی مضامین بے حد عمدہ ہیں جو میں نے بچوں کو پڑھ کر سنائے جسکو انہوں نے  بہت شوق سے سنا۔ (عظمی طارق جرمنی)

السلام علیکم ورحمة اللہ۔آبگینے ماہ ستمبر کا شمارہ پڑھا ماشاء اللہ تمام تحریریں اور کلام بے حد عمدہ اور معیاری ہیں۔ کامیاب اشاعت پر پوری ٹیم مبارکباد کی مستحق ہے۔ اگلے شمارے کا انتظار رہے گا۔ (سلمی مبارکہ جرمنی)

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ۔خوبصورت رنگوں اور الفاظ سے سجا آبگینے ڈائجسٹ کا ستمبر 2019 کا شمارہ پڑھا۔ مضامین اور افسانے پسند آئے۔ خاص طور پر “کرارا طمانچہ” میں آجکل کے بہت اہم مسئلے پر خوبصورتی سے جمیلہ صاحبہ نے لکھا۔ مبشرہ ناز صاحبہ ویسے ہی میری پسندیدہ مصنفات میں سے ہیں۔ باقی سب نے بھی بہت اچھا لکھا۔ شاعری بھی پسند آئی۔آئیے اردو سیکھیں کا سلسلہ بہت اچھا ہے۔ مگر گزارش ہے کہ اس میں اردو رسم الخط لکھنا سکھانے کو بھی شامل کر لیں تو اور بہتر ہو جائے گا۔ مریم منور صاحبہ کی رائے سے متفق ہوں کہ بہت سا مواد فی الحال ایسا ہے جو بہت آسانی سے قریباً ہر اسلامی اور جماعتی لٹریچر میں میسر ہے۔ اگر کچھ ایسے موضوعات پر دینی مواد شامل کریں جو بار بار پڑھا نہ ہو تو دلچسپی زیادہ ہو گی۔اللہ تعالیٰ ڈائجسٹ کو دن دگنی رات چوگنی ترقی عطا فرمائے اور ٹیم کو اور لکھنے والوں کو  جزائے خیر دے آمین۔(شوکت سلطانہ احمد جرمنی)

محترم جناب محی الدین عباسی صاحب!

ابھی تھوڑا ہی عرصہ گزرا تھا کہ ہم لاہور انٹر نیشنل اردو اور انگریزی پڑھ کر مستفید ہورہے تھےاور حیران تھے کہ آپ کیسی خوش اسلوبی سے یہ ماہنامہ دونوں زبانوں میں شائع کر رہے ہیں اورآن لائن رسالوں میں بالکل جدا راستہ اختیار کئے ہوئے ہیں ۔ یہ صرف ادبی میگزین نہیں ہے بلکہ اسمیں سیاست بھی ہے ثقافت بھی ہےتنقید بھی ہے اور تحقیقی مضامین بھی ہیں اور پھر انکا چناؤ بھی مقداری نہیں معیاری ہے۔اب اچانک آبگینے کے اجراء نے ہمیں اور بھی حیرت زدہ کر دیا ہےایسے میں آپکو اور آپکی پوری ٹیم کودل کی گہرائی سے مبارکباد دیتا ہوں۔ اللہ تعالی اس معیار کو قائم رکھنے کی توفیق دے اور دوسرے رسالوں کی طرح  اسمیں کچرا جگہ نہ پا سکے۔ آمین (طاہر مجید جرمنی)

آپ بھی اپنا پیغام بھجوائیں