//یوم تاسیس
editorial

یوم تاسیس

۔ اداریہ

مدثرہ عباسی ۔  مدیرہ

الحمدُللہ کہ آج آبگینے کو شروع کئے ایک سال کا عرصہ ہو گیا ہے۔سب معزز قارئین کی خدمت میں بہت مبارکباد۔

ہماری کوشش یہی رہی ہے کہ ا ردو کا معیار ا س رسالے میں بہت زیادہ بہتر رہے۔ اس رسالے میں اگرچہ زیادہ لڑیاں ادبی اور شاعری سے متعلق ہوتی ہیں۔آبگینے کا یہ ماہ اس کی تاسیس کا مہینہ ہے۔ آج سے ٹھیک ایک سال قبل یعنی ، اگست 2019 کو دنیا بھر میں اردو پڑھنے والے قارئین کے لیے یہ ڈیجیٹل پلیٹ فارم پر ایک خواتین کے لئے رسالہ شروع کیا گیا جو ایک تازہ ہوا کا جھونکا ثابت ہوا۔اس ایک سال کے دوران آبگینے کی کوشش رہی ہے کہ خواتین کو حالات حاضرہ، ٹیکنالوجی سمیت اسلامی تعلیمات اور دنیاوی مختلف شعبہ جات سےاپ ڈیٹ رکھا جائے بلکہ مختلف زوایوں سےبھی روشناس کروایا جائے۔ایک سال کے دوران ہمارے قارئین کی تعداد سے ظاہر ہوتا ہے کہ ہماری کوششیں کس حد تک کامیاب رہی ہیں۔ تاہم یہ ایک طویل سفر کا آغاز ہے اور مستقبل میں ہماری پوری کوشش رہے گی کہ اپنے قارئین کے لیے مزید بہتر اور منفرد مواد پیش کریں۔

گزشتہ شمارے میں درست تحریر کے لئے اہم باتیں بتائی گئی تھیں اس سے متعلق مزید تحریر کو بہتر کرنے پر روشنی ڈالوں گی۔تحریر کو بہتر بنانے کے دو پہلو ہیں۔

ایک یہ کہ تحریر کی زباندانی کا معیار بہتر ہونا۔دوسرا یہ کہ تحریر کے معانی و مطالب کا محرر کے اصل خیالات کی عکاسی کرنا۔ یعنی جو محرر کے دل میں ہے، تحریر سے بھی وہی مطلب سامنے آئے۔نکتۂ اولین کے لئے جو نسخہ ہے وہ یہ ہے کہ اپنےمطالعہ کو وسیع کیا جائے۔ مختلف اسالیب کے مصنفین کی کتب و مضامین پڑھی جائیں۔ ان کی زباندانی اور الفاظ و تراکیب کے استعمال پہ غور کیا جائے۔ کچھ عرصے بعد وہ الفاظ و تراکیب آپ کو شناسا اور روزمرہ نما لگنا شروع ہو جائیں گی۔ اب آپ ان کو اپنی تحاریر میں بھی خوش اسلوبی سے شامل کر سکتی ہیں۔نکتۂ ثانیہ کی بابت یہی مشورہ ہےکہ جو بھی لکھنا ہو، یوں سمجھیں کہ جیسے اپنے لئے لکھ رہے ہیں۔ اپنی آواز خود کو سنوانے کی کوشش کریں۔ اگر مزاحیہ تحریر لکھنی ہے تو یہ سوچ کر لکھیں کہ خود کو ہنسانا ہے۔ اگر جذباتی تحریر لکھنی ہے تو سمجھیں کہ خود کو رلانا ہے۔ اس سے یہ ہو گا کہ تحریر آپ کے دل سے نکلے گی اور ایک ایک سطر سے وہی معنی ٹپکے گا کہ جو آپ کے ذہن میں ہے۔ اس کی نسبت اگر ابتدا سے ہی کوشش کریں گے کہ دوسروں کو دکھانے یا سنوانے کے لئے لکھیں تو مشکل پیش آ سکتی ہے۔آبگینے کی اپنی کمیونٹی ہے جو شروع سے اس سے چمٹے ہوئے ہیں۔ بڑے بڑے اچھے لوگ یہاں موجود ہیں۔ بہت ہی پیاری لکھاری خواتین، اس کو پڑھنے والی اور اگر کہیں غلطی ہو تو اس کو پوائنٹ آؤٹ کرنے والی جن کا تعلق اردو ادب سےہے، ہم ان سے بہت کچھ سیکھتےبھی ہیں۔ میں یہاں تمام لکھاری بہنوں، شاعرات ،افسانہ نگاروں اور اس کے پڑھنے والوں کا شکریہ ادا کرتی ہوں کہ آپ سب کی کوششیں اس کی ترقی کا باعث ہیں۔

بہرحال اس فورم پر اردو کے لئے ہماری کوشش ہو گی کہ یہ رسالہ ایساشاندار ر ہے کہ جس پر اس فورم کو بجا طور پر اردو کمپیوٹنگ کا سرخیل کہا جاسکتا ہو ہم اس پرخدا تعالیٰ کے شکر گزار ہیں کہ خدا نے ہمیں اس فورم کی راہ سجھائی اور دعا ہےکہ خدا تعالیٰ اس فورم کو یعنی آبگینے کومزید کامیاب کرے۔آمین

میری دعا ہے کہ:

آبگینے کو دے شاداب موسم کی نوید

ہر مہینے میں بہت برگ و ثمر بھی دے اسے