//کھانوں میں میوہ جات کا استعمال

کھانوں میں میوہ جات کا استعمال

خشک میوہ جات قدرت کی عطا کردہ نعمت ہیں، جن کا اعتدال کے ساتھ استعمال انسان کو کئی طرح کی بیماریوں سے محفوظ رکھتا ہے۔

خشک میوہ جات میں مونگ پھلی،بادام، پستہ، کاجو،کشمش، اخروٹ، انجیر اور چلغوزے شامل ہیں۔ موسمِ سرما میں خشک میوہ جات کا  استعمال عام دنوں کے مقابلے میں زیادہ ہوجاتا ہے۔ ہمیں چاہیے کہ موسم کی مناسبت سے اپنے معمولات میں تبدیلی لائیں کیونکہ موسم تبدیل ہونے سے انسان کے طبعی رجحانات، فطری میلانات اور جسمانی ضروریات میں بھی تبدیلی واقع ہو جاتی ہے۔ خشک میوہ جات جسم کو حرارت پہنچانے کا قدرتی اور سادہ ذریعہ ہیں۔

ان قدرتی غذائوں میں ہمارے لیے بیماریوں سے حفاظت اور شفایابی کی صلاحیت پائی جاتی ہے۔ موسم کی مناسبت سے متوازن غذائوں کا  استعمال ہمیں ایک بڑی حد تک ضدی اور موذی امراض (کینسر، امراض قلب اور کولیسٹرول) سے محفوظ رکھتا ہے۔ موسم سرما میں انسان کو غذائیت سے بھرپور خوراک کی ضرورت ہوتی ہے جبکہ کار کردگی کے لحاظ سے نظامِ انہضام خوراک کو زیادہ سے زیادہ ہضم کرنے کے قابل ہوتا ہے۔یہی وجہ ہے کہ موسم ِ سرما میں خشک میوہ جات کا استعمال نہ صرف صحت کو بحال اور قائم رکھتا ہے بلکہ کئی جسمانی عوارض سے چھٹکارا بھی دلاتا ہے۔ آج ہم قارئین کی خدمت میں خشک میوہ جات سے بنائے جانے والے میٹھے اور نمکین کھانوں کی کچھ ریسیپیز پیش کررہے ہیں۔

خشک میوہ جات اور قورمہ

درکار اجزاء:گوشت۔ آدھا کلو،ہلدی۔ دو چٹکی،دھنیا۔ آدھا چمچ،گھی/تیل۔ آدھا لیٹر،لہسن۔ سات جوے،لال مرچ۔ حسبِ ضرورت،ادرک۔ حسب ِضرورت،نمک۔ حسبِ ذائقہ،بادام۔ 125گرام،پستہ۔ 125گرام،مونگ پھلی۔ 125گرام،کشمش۔ 125گرام،دہی۔ 125گرام۔

ترکیب:رات کو بادام پانی میں بھگو دیں اور صبح ان کا چھلکا اُتارکر تیل یا گھی میں فرائی کرلیں۔ اسی طرح پستے، مونگ پھلی اور کشمش کو بھی گھی میں ہلکا ہلکا فرائی کریں۔ گھی میں پیاز لال کرنے کے بعد مسالہ بھونیں اور پھر گوشت کو دہی سمیت ڈال کر بھونیں۔ اب میوے ڈال کر پانی ڈال دیں۔ جب گوشت گل جائے تو حسبِ ضرورت ایک بار پھر تھوڑا سا بھونیں اور پتیلی کو چولہے سے اتار لیں۔ اس میں گرم مسالے ڈال کر ڈھک دیں۔ کچھ دیر بعدخشک میوہ جات سے تیار قورمہ کھانے کے لیے پیش کریں۔

چکن نوابی ہانڈی

درکار اجزاء:چکن بون لیس۔ آدھا کلو،نمک۔ حسبِ ذائقہ،لہسن پیسٹ۔ ایک چائے کا چمچ، ادرک پیسٹ۔ ایک چائے کا چمچ،لیموں کا رس۔ 1½ کھانے کا چمچ، بادام، کاجو، پستہ کا پیسٹ۔ تین کھانے کے چمچ،ہری مرچ (چوپکی ہوئی)۔ دو عدد، دہی۔ 50گرام، لال مرچ پاؤڈر۔ ایک چائے کاچمچ، گرم مسالہ پاؤڈر۔ایک چائے کا چمچ، زیرہ پاؤڈر۔ایک چائے کا چمچ، دھنیا پاؤڈر ایک چائے کا چمچ، پیاز (چوپ کی ہوئی)۔ 2½ کھانے کے چمچ، کریم۔ تین کھانے کے چمچ، ہرا دھنیا۔ گارنشنگ کیلئے، مکھن۔ ایک کھانے کا چمچ، کھانے کا تیل۔ چار کھانے کے چمچ، کوئلہ۔ ایک عدد

ترکیب:ایک برتن میں چکن لیں اور اس میں نمک، لہسن پیسٹ، ادرک پیسٹ، لیموں کا رس، بادام، کاجو اور پستہ کا پیسٹ، ہری مرچ، دہی، لال مرچ پاؤڈر، گرم مسالہ پاؤڈر، زیرہ پاؤڈر اور دھنیا پاؤڈر ڈال کر اچھی طرح ملائیں اور ایک گھنٹے کے لیے فریج میں رکھ دیں۔ اب ایک کڑھائی میں کھانے کا تیل ڈالیں اور اس میں پیاز اور تیار کی ہوئی چکن ڈال کر تین سے چار منٹ کے لیے دَم دے لیں اور پھر دو سے تین منٹ تک اچھی طرح بھون لیں۔ اب اس میں کریم ڈا ل کر ہرے دھنیے کو بطور گارنش استعمال کر لیں۔ اس میں مکھن ڈا ل کر دہکتا کوئلہ رکھیں اور پھر اس کے اوپر کھانے کا تیل یا مکھن ڈال کر ایک سے دومنٹ کا دَم دیں۔ لیجیے مزیدار چکن نوابی ہانڈی تیار ہے۔

شاہی حلوہ

درکار اجزاء:مکھن۔ 3سے4کھانے کے چمچ،سوجی۔ 1½ کپ،گھی۔ ½ کھانے کا چمچ،چینی۔ ½ کپ،پانی۔ ½ کپ،الائچی پاؤڈر۔ ایک چائے کا چمچ،دودھ۔ حسبِ ضرورت، زعفران (گارنش کیلئے)۔ ½ چائے کا چمچ، پستے (پسے ہوئے)۔ 2سے3کھانے کے چمچ، بادام (پسے ہوئے)۔ 2سے3کھانے کے چمچم، گھی۔ 2کھانے کے چمچ، کشمش۔2کھانے کے چمچ،

ترکیب:ایک چھوٹی پتیلی میں مکھن ڈال کر پگھلائیں، اس کے بعد اس میں سوجی ڈال کر بھونیں۔ بھوننے کے بعد آدھا کھانے کا چمچ گھی ڈال کر مزید بھونیں۔ اب چینی ڈال کر پھر سے اچھی طرح بھون لیں۔ پھر پانی ڈال کر تھوڑا سا اور پکائیں۔ اب اس میں پسی ہوئی الائچی، دودھ اور زعفران ڈالیں اور اچھے سے مکس کریں،یہاں تک کہ سوجی پک جائے۔ اب اس میں کٹے ہوئے پستے ڈالیں اور ایک بار پھر مکس کریں۔ اس کے بعد اس میں کٹے ہوئے بادام اور گھی ڈال کر مکس کریں۔ پھر کشمکش ڈالیں اور چمچ چلاتے رہیں۔ لیجیے مزیدار شاہی حلوہ تیار ہے۔